جموں و کشمیر اسمبلی میں پاکستان کی بلااشتعال فائرنگ پر سخت احتجاج - Taemeer News | A Social Cultural & Literary Urdu Portal | Taemeernews.com

2018-02-05

جموں و کشمیر اسمبلی میں پاکستان کی بلااشتعال فائرنگ پر سخت احتجاج

ہندوستانی سرحد پر پاکستان کی فائرنگ سے 4 فوجیوں کی اموات کا معاملہ آج پیر کے دن جموں و کشمیر اسمبلی میں اٹھایا گیا۔ سرحد پر پاکستان کی اشتعال انگیز پرتشدد کارروائی اور سیز فائر کی خلاف ورزی کے معاملے پر، جہاں حزب مخالف نے حکومت کو گھیرنے کی کوشش کی وہیں دوسری جانب بی جے پی اراکین نے پاکستان مردہ باد کے نعرے لگائے۔ پاکستان کے اس قابل اعتراض اقدام پر اسمبلی میں تقریباً تمام اراکین نے ناراضگی کا اظہار کیا۔
واضح رہے کہ اتوار کو پاکستانی فائرنگ اور چھوٹے میزائل سے کیے گئے حملے میں، فوج کے 23 سالہ کپتان کپل کنڈو سمیت چار دیگر فوجی اس حملے میں ہلاک ہوئے ہیں۔
اس حملے پر پاکستان کے خلاف شدید غم و غصے کا اظہار کیا گیا تھا۔ مرکزی وزارت داخلہ کے صوبائی وزیر ہنس راج اہیر نے کہا کہ اس حملہ پر پاکستان کو معاف نہیں کیا جا سکتا، پاکستان کو جلد سبق سکھایا جائے گا۔
دریں اثنا جموں و کشمیر اسمبلی میں حزب اختلاف نے سرحد پر پاکستان کی طرف سے لگاتار جاری جنگ بندی کی خلاف ورزی کا مسئلہ اٹھایا۔

نائب آرمی چیف لیفٹیننٹ جنرل شردچند نے بھی پاکستان کی اس نامناسب کارروائی کا بھرپور جواب دینے اشارہ کیا ہے۔ شردچند نے کہا کہ ہماری جوابی کارروائی سے سب کچھ واضح ہو جائے گا۔
دوسری جانب پیر کی صبح ہی سے پاکستانی سرحد سے لگاتار فائرنگ جاری ہے۔ سرحد پار فائرنگ کے سلسلے میں، فوج نے سرحدی علاقوں کے 84 اسکولوں کو تین دن تک بند کرا دیا ہے۔ گزشتہ 40 دنوں میں، گرگاؤں کے کپتان کنڈو پاکستانی فائرنگ میں ہلاک ہونے والے دوسرے فوجی افسر ہیں۔ بھنبرگلی سیکٹرکے علاوہ پاکستان نے سندربنی کے علاقے میں سیزفائر کی خلاف ورزی کی ہے۔ آرمی افسران نے بتایا کہ اتوار کی شام ساڑھے تین بجے سے ہی پاکستان کی جانب سے بلااشتعال فائرنگ کا سلسلہ جاری ہے۔

Jammu and Kashmir Assembly rocked over Pakistan firing

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں