Search | تلاش
Archives
TaemeerNews Rate Card

Ads 468x60px

Our Sponsor: Urdu Kidz Cartoon Website

تعمیر نیوز آرکائیو - TaemeerNews Archive

2018-01-15 - بوقت: 16:11

اردو - بین الاقوامی مزاج کی مخلوط زبان

Comments : 0
Urdu an international language of mixed culture
اُردو ۔۔۔ اِس وقت دنیا کی چند بڑی زبانوں میں سے ایک ہے۔ اقوام متحدہ کے ادارے ‘ یونیسکو’ کے اعداد و شمار کے مطابق عام طور پر سمجھی اور بولی جانے والی زبانوں میں ‘چینی’ اور ‘ انگریزی’ کے بعد دنیا کی یہ تیسری بڑی زبان ہے۔
اُردو کے بولنے اور سمجھنے والے دنیا کے ہر علاقے اور ہر ملک میں موجود ہیں ۔ اُردو کے اِس حلقۂ اثر کو دیکھتے ہوئے اِسے انگریزی کے بعد دنیا کی دوسری سب سے بڑی زبان کہنا مبالغہ نہ ہوگا۔
اُردو ۔۔۔ اپنی ساخت میں بین الاقوامی مزاج کی مخلوط زبان ہے ۔ اس کا بنیادی ڈھانچہ مقامی ہے لیکن اس میں مختلف زبانوں کے الفاظ اس کثرت سے اور اس انداز سے داخل ہو گئے ہیں کہ اُردو اپنی اساس میں بین الاقوامی زبانوں کی ایک انجمن بن گئی ہے اور ہر شخص کے لیے ایک کشش رکھتی ہے۔
ایشیائی زبانوں ، خصوصاً عربی ، فارسی ، ترکی ، سنسکرت اور پاکستان اور ہندوستان کی دوسری مقامی بولیوں کے الفاظ کی تعداد بھی اس میں خاصی ہے اور یہ الفاظ روزمرہ کی تقریر و تحریر میں برابر بولے اور لکھے جاتے ہیں ۔

اِس سلسلے میں چند نمونے پیش خدمت ہیں ۔
1) عربی :
صندوق ، کرسی ، کتاب ، علاج ۔۔۔ وغیرہ۔
2) ترکی :
بیگم ، توپ ، اتالیق ، قلی ، قورمہ ، خاتون ۔
3) فارسی :
گل و غنچہ ، برگ و بار اور آب و خاک ۔۔۔ وغیرہ۔
4) چینی :
کاغذ ، چائے ، تام جھام ، چوں چوں (چوں چوں کا مربہ )۔
5) سنسکرت :
پنڈت ، برکھا ، رُت ، رشی ، وید ، کوی ، کویتا ، کریاکرم ، دھرم ۔۔۔ وغیرہ۔
6) یونانی :
گراموفون ، فون ، ٹیکنیکل ، ایجنٹ ، آپریشن ، لیکچر ، الیکشن ، پائپ ، سرکس ، کانگریس ، کانفرنس ، ووٹ ، ڈراما ، کیمرہ ، کورس ، بکس ، ایلوپیتھی ، آکسیجن ، نمونیہ ، جنکشن ، ڈویژن ، ریگولر ، فیملی ، فوکس ۔۔۔ وغیرہ ۔
(اِن میں سے کچھ براہ راست اور کچھ انگریزی کی معرفت اُردو میں داخل ہوئے ہیں )
7) پرتگالی :
الماری ، انناس ، تولیہ ، پادری ، چابی ، صوفہ ، صابن ، فالتو ، گرجا ، گودام ، میز ، نیلام ، ورانڈا ۔۔۔ وغیرہ۔
8) فرانسیسی :
ایڈی کانگ ، پریڈ ، کارتوس ، پارک ، گارڈ ، اردلی ، ٹروپ ۔۔۔ وغیرہ۔
9) اطالوی :
انفلوئنزا ، ملیریا ، پیانو ، سوڈا ، لاٹری ، لاکٹ ، سائز ، بیلٹ ، بالکنی ۔۔۔ وغیرہ۔
10) جرمن :
ڈرل ، اسپرے ، ٹب ، سوئچ ، مگ ۔
11) اسکنڈے نیویا :
اسکاؤٹ ، ٹفن ، ٹرام ، جمپ ، جمپر ، جرسی ، ٹرسٹ ، فیلو ، کیک ، لفٹ ، لگیج ، کیتلی ۔۔۔ وغیرہ۔
12) ولندیزی :
برانڈی ، پلگ ، ڈرم ، ویگن ، گولف ۔۔۔ وغیرہ۔
13) انگریزی :
کار ، کالج ، یونی ورسٹی ، لوٹ ، ترپال ، بلڈنگ ، برجس ، پریس ، مشین ، اسکول ، کلاس ، روم ، ٹکٹ ، اسٹیشن ۔۔۔ وغیرہ۔

اُردو کے اس مخلوط مزاج کے نتیجے میں یہ ہوا ہے کہ اردو کے ہر جملے میں کئی کئی زبانوں کے الفاظ شامل ہوتے ہیں اور ان جملوں کو سننے اور سمجھنے والا ذرا دیر کے لیے یہ محسوس کرتا ہے جیسے وہ خود بھی اُردو سے مانوس ہے یا کم ازکم اس زبان کے بعض الفاظ سے آشنائی رکھتا ہے۔ یوں یہ احساس اُسے اُردو کے قریب لاتا ہے اور وہ اسے حسبِ ضرورت آسانی سے سیکھ لیتا ہے ۔

Urdu, international language of mixed culture. Article: Dr. Farman Fatehpuri

0 تبصرے:

ایک تبصرہ شائع کریں