Search | تلاش
Archives
TaemeerNews Rate Card

Ads 468x60px

Our Sponsor: Socio Reforms Society India

تعمیر نیوز آرکائیو - TaemeerNews Archive

2018-01-01 - بوقت: 22:32

راہل کی کانگریس صدارت - ممتا بنرجی کا کانگریس سے فاصلہ قائم رکھنے کا فیصلہ

Comments : 0
نئی دہلی
ایجنسیاں
کیا مغربی بنگال کے وزیراعلی اور ٹی ایم سی سپرمو ممتا بنرجی نے خصوصی حکمت عملی کے تحت کانگریس سے فاصلہ قائم کر رکھا ہے؟ گجرات اسمبلی انتخابات کے نتائج کے بعد 18 دسمبر کو اور راہول گاندھی کی طرف سے صدر کانگریس کا عہدہ سنبھالنے کے بعد سے، ممتا بنرجی نے ایسی حکمت عملی قائم کی ہے۔ پارلیمنٹ میں اس فیصلے کے اثرات دیکھے جا رہے ہیں، جہاں کانگریس کی قیادت کی مخالفت سے ترنمول گریز کر رہی ہے اور 'علیحدہ رہو' پالیسی پر عمل پیرا ہے۔

ممتا بنرجی کا کہنا ہے کہ 2019 کے عام انتخابات سے پہلے وہ اپنا کارڈ نہیں کھولیں گی۔ اس دوران، وہ کانگریس اور بی جے پی سے برابر فاصلہ رکھیں گی۔ اپنی ریاست میں بی جے پی کی مخالفت کریں گی اور مرکز میں اہم بل پر بی جے پی کی حمایت کرنے تیار ہیں۔ واضح ریے کہ تین طلاق جیسے بل پر ٹی ایم سی، ایک غیر متوقع انداز میں پوری بحث سے دور رہی تھی۔ حزب مخالف جماعتوں کے اجلاس سے بھی ترنمول کے ارکان پارلیمان غیرحاضر رہے تھے۔ کانگریس کے ساتھ بھی کچھ بھی اسی طرح کی حکمت عملی قائم کی جائے گی۔ ٹی ایم سی کے ذرائع کے مطابق، 2019 سے پہلے، کسی بھی اتحادی محاذ میں ممتا بنرجی کی شمولیت ان کی سیاسی ضرورت نہیں ہے۔ کیونکہ وہ ابھی تک اپنی ریاست میں مضبوط ہیں۔ ایسی صورتحال میں، ممتا کسی اتحاد کے ساتھ شامل ہو کر اپنی سیاسی اہمیت کو کم کرنا نہیں چاہیں گی۔

اس کے علاوہ، کولکتہ میں اپنی گرفت مضبوط کرنے کے بعد دہلی پر بھی ممتا بنرجی کی نظریں ہیں۔ نیشش کمار کے این۔ڈی۔اے میں شامل ہونے کے بعد، حزب اختلاف کے اتحاد میں مقبول عام چہرے کا فقدان رہا ہے۔ راہل گاندھی چونکہ اس وقت زیادہ فعال نہیں تھے۔ لیکن حالیہ دنوں میں، راہل کی بڑھتی ہوئی سرگرمی کے بعد ممتا بنرجی متوازی طاقت بننا چاہتی ہیں، تاکہ 2019 میں اگر کبھی کانگریس یا غیر بی جے پی پارٹی کی ضرورت کی جائے تو ممتا خود اس کا دعوی پیش کر سکیں۔ یہی وجہ ہے کہ کانگریس سے دوری بنائے رکھنے کے باوجود ترنمول کے تعلقات اپوزیشن جماعتوں سے بہتر ہو رہے ہیں۔

حالیہ دنوں میں، 2019 کے انتخابات کے پیش نظر حکمت عملی کے بطور نوین پٹنائک، شرد پوار کے علاوہ، ممتا بنرجی نے شیوسینا کے ساتھ تک اپنے تعلقات کو وسعت دی ہے۔ گجرات کے انتخاب کے فوراً بعد، ممتا نے ہاردک پٹیل کو مبارکباد کے ساتھ انہیں اپنی ریاست کے دورہ کی بھی دعوت دی ہے۔
بی جے پی کی طرف نرم نرم رویہ اختیار کرنے کے بعد ترنمول اراکین کی جارحانہ مخالفت کو روکنے کی بھی ممتا کو ضرورت درپیش ہو سکتی ہے۔ چونکہ حال ہی میں ممتا کے قریبی ساتھیوں میں سے مانے جانے والے مکل رائے بی جے پی میں شامل ہو چکے ہیں۔

دراصل، حالیہ دنوں میں، کچھ سیاسی پیش رفت کے سبب بھی ممتا بنرجی نے کانگریس سے اپنے فاصلے میں دوری اختیار کی ہے۔ کانگریس نے ممتا بنرجی کی بجائے بایاں محاذ کو زیادہ ترجیح دی تھی۔ مغربی بنگال اسمبلی کے انتخابات میں، کانگریس نے بائیں بازو سے اتحاد کیا، جبکہ ممتا کانگریس سے اتحاد کی خواہاں تھیں۔ مغربی بنگال میں نمایاں کامیابی کے بعد، ممتا بنرجی نے کہا کہ اسمبلی انتخابات سے قبل کانگریس کے ساتھ اتحاد کی خاطر تین دن تک وہ دہلی میں مقیم تھیں، لیکن کوئی پارٹی رہنما نے گفتگو کرنا گوارا نہیں کیا۔ اس کے علاوہ، ٹی ایم سی نے بہت سے دوسرے معاملات پر الزام لگایا ہے کہ اپوزیشن اتحاد کی کوششوں کے دوران انہییں اعتماد میں نہیں لیا گیا تھا۔

Mamata Banerjee's decision to keep a distance from Congress

0 comments:

Post a Comment