Search | تلاش
Archives
TaemeerNews Rate Card

Ads 468x60px

Our Sponsor: Socio Reforms Society India

تعمیر نیوز آرکائیو - TaemeerNews Archive

2017-11-28 - بوقت: 15:02

غالب انسٹی ٹیوٹ کے غالب انعامات برائے سال 2017 کا اعلان

Comments : 0
ghalib-awards-2017
غالب انسٹی ٹیوٹ کے غالب انعامات برائے سال 2017 کا اعلان
پروفیسر قاضی جمال حسین ، پروفیسر سید حسن عباس، شفیع مشہدی، پروفیسر شہناز نبی، ڈاکٹر محمد کاظم، پروفیسر ارتضی کریم مختلف زمرون کے لئے ایوارڈ کے حقدار قرار دئیے گئے

غالب انسٹی ٹیوٹ کی ایوارڈ کمیٹی کی ایک اہم میٹنگ۲۷ نومبر کو ایوان غالب میں غالب ایوارڈ کمیٹی کے چیئرمین جسٹس آفتاب عالم کی صدارت میں ہوئی جسٹس آفتاب عالم کے علاوہ غالب انسٹی ٹیوٹ کے سکریٹری پروفیسر صدیق الرحمن قدوائی ، پروفیسر شمیم حنفی، پروفیسر چندر شیکھر ، ڈاکٹر اطہر فاروقی اور غالب انسٹی ٹیوٹ کے ڈائرکٹر ڈاکٹر رضا حیدر میٹنگ میں موجود تھے۔ اس اہم موقع پر تمام ممبران نے غالب انسٹی ٹیوٹ کے پروقار غالب انعامات ۲۰۱۷ء کے چھ اہم انعامات پر فیصلہ کیا۔ اردو کے ممتاز ناقد ودانشور کئی اہم کتابوں کے مصنف اور شعبہ اردو علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے سابق پروفیسر قاضی جمال حسین کو ان کی علمی و ادبی خدمات کے اعتراف میں فخر الدین علی احمد غالب ایوارڈ برائے اردو تحقیق و تنقید سے سرفراز کیا جائے گا۔ فارسی کے نامور اسکالر اور رضا لائبریری رامپور کے ڈائرکٹر پروفیسر سید حسن عباس کو فخر الدین علی احمد غالب ایوارڈ برائے فارسی تحقیق و تنقید کے لئے منتخب کیا گیا ۔ معروف تخلیق کار واردو مشاورتی کمیٹی، بہار کے چیئرمین شفیع مشہدی کا نام غالب ایوارڈ برائے اردو نثر کے لئے طے کیا گیا عہد حاضر کی نامور شاعرہ اور کلکتہ یونیورسٹی شعبہ اردو کی سابق چیئرپرسن پروفیسر شہناز نبی کا نام غالب انعام برائے اردو شاعری کے لئے تجویز کیا گیا ۔ ہم سب غالب ایوارڈ برائے اردو ڈرامہ کے لئے مشہور ڈرامہ نگار اور اپنی تحریروں کے ذریعے اردو زبان و ادب کے فروغ میں اپنا اہم کردار ادا کرنے والے ڈرامہ نویس ڈاکٹر محمد کاظم کے نام پر اتفاق ہوا اور مجموعی ادبی خدمات کے لئے قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان کے ڈائرکٹر و شعبہ اردو دہلی یونیورسٹی کے سابق صدر پروفیسر ارتضی کریم کے نام پر میٹنگ میں بیٹھے تمام لوگوں نے اتفاق کیا۔ یہ تمام ایوارڈ بین الاقوامی غالب تقریبات کے افتتاحی اجلاس میں ۲۲ دسمبر ۲۰۱۷ء کو سرٹیفکیٹ ، مومنٹو اور پچہتر ہزار روپے نقد کے ساتھ ایوان غالب میں عطا کئے جائیں گے ۔ غالب انسٹی ٹیوٹ پچھلے چالیس برسوں سے دو سو سے زائد انعامات اردو فارسی، ادب ، ثقافت، سائنس، اور مختلف علوم و فنون میں کام کرنے والے اہم دانشوروں کو ان کی گرانقدر خدمات کے لئے نواز چکا ہے ۔ غالب ایوارڈ کی ایک اہم خاصیت یہ بھی ہے کہ اردو اور فارسی کے اساتذہ ادبا، شعراء اور نامور ہستیوں کے مشوروں کو مد نظر رکھ کر ایوارڈ کمیٹی انعامات کا فیصلہ کرتی ہے ۔

Ghalib Awards 2017 by Ghalib Institute Delhi

0 comments:

Post a Comment